اقرار الحسن کی جان خطرے میں،ذمہ داری کس پر ہو گی؟؟؟

اقرار الحسن جو کہ مشہور ٹی وی شو سرِ عام کے ہوسٹ ہیں , وہ ہمیشہ سے اپنی جان پر کھیل کر مجرموں کو بے نقاب کرتے آ ئے ہیں۔ انہوں نے ابھی ایک ویڈیو میں اپنی اور اپنے ساتھیوں کی جان کے خطرے کے بارے میں بات کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ میں یہ بات صرف  اس لیے سوشل میڈیا پر سامنے لا رہا ہوں  کہ پروگرام سرِ عام کی وجہ سے ،پروگرام سے وابستہ کسی ٹیم میمبر کی نا حق جان چلی جائے تو تکلیف ہو گی۔انہوں نے کیا کہ میری اپنی جان وطن کے لیے حاضر ہے۔

جان کا دشمن کون؟؟

انہوں نے بتایا کہ آج سے تقریباً ۳ سال پہلے ان کی ٹیم نے رینجرز کے ساتھ مل کر جعلی پولیس آفسر اور اس کے ساتھیوں کو پکڑا تھا جو پولیس کی وردی میں اغوا برائے تاوان کا کام کرتا تھا ۔انہوں نے بتایا کہ کہ ہمارے بندے اس  گینگ میں شامل ہو کر اس کی خفیہ ویڈیو  رکارڈنگ کے ثبوت بھی اکٹھے کرتے رہے  ہیں۔  اگر انہیں وڈیوز کا معلوم جاتا کہ یہ لوگ ٹیم سرِعام کے لوگ ہیں تو وہ ان کی جان لے لیتے۔اس ساری کاروائی کے دوران اس گینگ نے ایک لڑکی کو اغوا کیا تھا اور مزاحمت پر اسے گولی مار دی گئی تھی۔بعد ازاں وہ اسپتال میں زیرِ علاج رہی۔

۳سال پہلے جولائی میں اس کے اڈے سے ٹیم سرِ عام نے ۲لڑکیاں اور ایک شخص کو بازیاب کروایا تھا جنکے ہاتھ اور پاؤں بندھے ہوئے تھےاور وہ خوف کی شدت سے کانپ رہے تھے۔اس کاروائی کے بعد رینجرز کی مدد کے بدولت اس گینگ کو گرفتار کر لیا گیا۔گرفتاری کے بعد یہ انکشاف ہوا تھا کہ اس شخص پر قتل کے کم از کم ۳ مقدمات ،ختلف تھانوں میں درج ہیں ان تھانوں کی پولیس نے ان مقدمات کی وجہ سے آ کر اس شخص کو عملی طور پر گرفتار کر لیا ۔لوور کورٹ سے اس شخص کی ضمانت خارج ہونے کے باوجود ۳ سال بعد ہائی کورٹ سے اس شخص کی ضمانت منظور کر لی گئی۔ رہائی کے بعد اس نے سرِعام کی ٹیم کے ایک بندے کا پیچھا کیا اور اسے تشدد کر کے مارنے کی کوشش کی مگر وہ ٹیم میمبر بچنے میں کامیاب رہا ۔

اقرار الحسن نے اپنی وڈیو میں در خواست کرتے ہوئے کہا کہ اس وڈیو کو ذیادہ سے ذیادہ پھیلائیں اور اگر کوئی شخص اس کے بارے میں کچھ جانتا ہو تو پولیس یا رینجرز کی ہیلپ لائن پر کال کر کے ضرور بتائیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *